بین الاقوامی

  • بین الاقوامی
  • Sep 13, 2018

روسی صدر کا فوج کو جدید ہتھیاروں سے لیس کرنے کا عزم

روس کے صدر ولادی میر پیوٹن نے روسی فوج کو مضبوط کرنے اور جدید ہتھیاروں سے لیس کرنے کے عزم کا اظہار کیا ہے۔
مشرقی سائبیریا میں جاری روسی تاریخ کی سب سے بڑی جنگی مشقوں "ووسٹوک 2018"کے معائنے کے دوران انہوں نے کہا کہ روس بین الاقوامی ملٹری پارٹنرشپ کا خواہاں ہے اورپارٹنرشپ کے لئے کسی بھی ملک کے ساتھ تعاون کے لئے تیار ہے۔چین کی سرحد کے قریب ہونے والی جنگی مشقوں میں روس کے تین لاکھ سے زائد فوجی، ہزاروں کی تعداد میں ٹینک، سینکڑوں جنگی طیارے اور بحری جہاز حصہ لے رہے ہیں۔مشقوں میں چین کے تین ہزار سے زیادہ فوجی اور منگولیا کے فوجی دستے بھی شریک ہیں۔جنگی مشقیں سترہ ستمبر تک جاری رہیں گی۔