قومی

  • قومی
  • Jul 24, 2019

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کا امریکی وزارت خارجہ کا دورہ

آرمی چیف جنرل قمرجاوید باجوہ نےامریکی وزارت خارجہ کا دورہ کیا اور وزیرخارجہ مائیک پومپیو سے ملاقات کی۔ آئی ایس پی آرکے مطابق ملاقات میں علاقائی سیکیورٹی کے معاملات بالخصوص افغان امن عمل پر گفتگو ہوئی ۔افغانیوں کی قیادت اور ان کے ذریعے ہی افغان مسئلے کی حل کی ضرورت پر زوردیا گیا۔ملاقات کے دوران افغان امن عمل میں موثر پیش رفت اور باہمی تعلقات بہتر بنانے کے امورپر تبادلہ خیال ہوا۔امریکی صدر اور پاکستانی وزیراعظم کی ملاقات کے تناظر میں پیش رفت پر بھی گفتگوہوئی۔آرمی چیف نے کہا کہ پاکستان امریکہ کے ساتھ دوطرفہ تعلقات کی بہتری کو بہت اہمیت دیتا ہے۔امریکہ سے باہمی عزت، اعتماد اور مشترکہ اقدار کی بنیاد پر تعلقات چاہتے ہیں۔

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے واشنگٹن میں سینیٹر لنڈسے گراہم اور ریٹائرڈ جنرل جیک کین نے بھی علیحدہ علیحدہ ملاقات کی ۔ ملاقاتوں میں علاقائی سلامتی کی صورتحال، افغان امن عمل اور پاکستان اور امریکہ کے دوطرفہ تعلقات پر تبادلہ خیال کیا گیا۔سینٹر لنڈسے گراہم نے اپنے دورہ پاکستان کا ذکر کرتے ہوئے خطے میں بہتر ہوتی ہوئی سلامتی کی صورت حال کے لئے پاکستان کے کردار کی تعریف کی۔
آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے معزز مہمانوں کو امن و امان کی بہتر صورتحال اور ملک میں غیر ملکی سرمایہ کاری کے مواقع سے آگاہ کیا ۔ انہوں نے کہاکہ دونوں ملکوں میں تعلقات سے نہ صرف باہمی فائدہ ہوگا بلکہ اس سے علاقائی استحکام میں بھی مدد ملے گی۔

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نےامریکی محکمہ دفاع پینٹاگون کا بھی دورہ کیا۔
پینٹاگون آمدپرآرمی چیف کو گارڈ آف آنر پیش کیا گیااور 21توپوں کی سلامی دی گئی ۔جنرل جوزف ڈین فورڈ نے آرمی چیف کا استقبال کیا ۔
آئی ایس پی آر کے مطابق جنرل قمر جاوید باجوہ نے امریکی چیف آف جوائنٹ چیفس آف سٹاف اور امریکہ کےقائم مقام وزیر دفاع سےملاقات میں افغان عمل سمیت خطے کی سکیورٹی صورتحال پر بات چیت کی۔
امریکی حکام نے افغان امن عمل میں پاک فوج کے کردار کی تعریف کی۔
آرمی چیف نے امریکی قومی ہیروز کی یادگار کا دورہ بھی کیا اور ہیروز کو خراج عقیدت پیش کیا ۔ تقریب کے دوران دونوں ملکوں کے قومی ترانے بجائے گئے۔