بین الاقوامی

  • Nov 30, 2023

غزہ میں عارضی جنگ بندی میں ایک روز کی توسیع

غزہ میں 6 روز سے جاری عارضی جنگ بندی میں مزید ایک روز کی توسیع ہوگئی۔ عارضی جنگ بندی کی مدت جمعرات کو مقامی وقت کے مطابق صبح 7 بجے ختم ہوگئی ۔فریقین نے مدت ختم ہونے سے کچھ منٹ قبل جنگ بندی میں ایک روز کی توسیع کا اعلان کیا۔توسیع کے دوران مزید فلسطینی قیدیوں اور اسرائیلی یرغمالیوں کو رہا کیا جائےگا۔اس سے قبل اسرائیل نے قیدیوں کی فہرست پر اختلافات کے باعث توسیع سے انکار کردیا تھا تاہم قطر کی کوششوں سے قیدیوں کے تبادلے پر اتفاق ہوگیا۔جنگ بندی کے چھٹے روز 4 غیر ملکیوں سمیت 16 یرغمالی اور 30 فلسطینی قیدی رہا ہوئے۔اقوام متحدہ نے کہا ہے کہ بڑے پیمانے پر فضائی حملوں اور بمباری کے باعث غزہ شہر کھنڈرات میں بدل چکا ہے۔ سڑکوں پر گڑھے پڑ گئے ہیں جس کے باعث امداد کی ترسیل میں مشکلات پیش آ رہی ہیں۔اقوام متحدہ نے مستقل جنگ بندی کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ جنگ بندی کے دوران پہلی مرتبہ شمالی غزہ میں پناہ گاہوں کوانسانی امداد کی فراہمی ممکن ہوئی۔انرا' کے مطابق غزہ کے 18 لاکھ سے زائد لوگ بے گھر ہیں ۔جن کو امداد کی اشد ضرورت ہے۔عالمی ادارہ صحت نے تصدیق کی ہے کہ غزہ میں ایک لاکھ 11 ہزار افراد سانس کے مسائل، 75 ہزارافراد اسہال اور دیگر بیماریوں میں مبتلا ہیں۔طبی خدمات کی عدم موجودگی میں بڑے پیمانے پر ہلاکتوں کا خدشہ ہے۔
دوسری جانب مقبوضہ مغربی کنارے میں صہیونی دہشتگردی جاری ہے۔اسرائیلی فورسز نے عفر جیل کے باہر فائرنگ کرکے 21 سالہ فلسطینی نوجوان کو شہید کردیا۔فائرنگ سے 4 فلسطینی نوجوان زخمی بھی ہوئے۔ قابض اسرائیلی فوج نے تلکرم شہر میں واقع پناہ گزین کیمپ پر دھاوا بول کر بلڈوزرز کی مدد سے کئی مکانات مسمار کردیےجبکہ گھروں کی تلاشی بھی لی۔اس سے قبل مقبوضہ مغربی کنارے میں واقع جنین کیمپ پربھی اسرائیلی فوج نے حملہ کرکے 8 سالہ بچے اور15 سالہ نوجوان کو شہید کردیا۔