ٹاپ سٹوری

  • Sep 14, 2021

وزیراعظم اور روسی صدر کا ٹیلی فونک رابطہ

وزیراعظم عمران خان نے عالمی برادری پر زو ر دیا ہے کہ وہ مشکل کی اس گھڑی میں افغان عوام کو اکیلا نہ چھوڑے اور ان کے ساتھ مکمل رابطے بحال رکھے ۔روس کے صدر ولادی میرپیوٹن کے ساتھ ٹیلی فونک گفتگو میں وزیراعظم عمران خان نے واضح کیا کہ افغانستان میں امن و استحکام علاقائی سلامتی اور خوشحالی کے لئے ناگزیر ہے۔ انہوں نے افغانستان میں ہنگامی بنیادوں پر انسانی امداد کی فراہمی اور اقتصادی بحران سے نمٹنے کےلئے تعاون پر زور دیا۔ دونوں رہنماؤں کے درمیان گزشتہ ایک ماہ سے بھی کم عرصے میں یہ دوسرا اہم ترین رابطہ ہے۔ وزیراعظم عمران خان اور روس کے صدر نے افغانستان کی تازہ ترین صورتحال ، دوطرفہ تعاون اور شنگھائی تعاون تنظیم کے پلیٹ فارم سے اشتراک پر تبادلہ خیال کیا۔ وزیراعظم نے کہاکہ افغانستان میں بدلتی ہوئی صورتحال کے پیش نظر پاکستان اور روس کے درمیان قریبی رابطے اور مشاورت وقت کی اہم ضرورت ہے۔ دوطرفہ تعاون پر بات چیت کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نےکہاکہ دونوں ملکوں کے درمیان مختلف شعبوں میں تعاون بڑھ رہا ہے ۔وزیراعظم نے روس کے ساتھ تعلقات کے مزید فروغ کے لئے پاکستان کےعزم کااعادہ کیا۔ انہوں نے کہاکہ تجارت،سرمایہ کاری اور توانائی کے شعبوں میں روس کے ساتھ تعاون کا فروغ ہمارے تعلقات کا اہم حصہ ہے۔ وزیراعظم عمران خان نے پاکستان سوئی گیس پائپ لائن منصوبے کی جلد تکمیل کے حکومتی عزم کا اعادہ کیا۔ وزیراعظم نے روس کے صدر کو دورہ پاکستان کی دعوت کا اعادہ کیا۔ صدر پیوٹن نے بھی ایک بار پھر وزیراعظم عمران خان کو روس کے دورے کی دعوت دی۔ دونوں رہنماؤں نے قریبی رابطے جاری رکھنے پر اتفاق کیا۔