قومی

  • Aug 05, 2021

عالمی برادری مقبوضہ کشمیر اور فلسطین میں تاریخی ناانصافیوں کا نوٹس لے : وزیراعظم

وزیر اعظم عمران خان نے عالمی برادری پر زور دیا ہے کہ وہ مقبوضہ کشمیر اور فلسطین میں تاریخی ناانصافیوں کا نوٹس لے۔ اسلام آباد میں ڈاکٹر سعید الغفلی کی سربراہی میں او آئی سی کے انسانی حقوق آزادکمیشن کے وفد سے بات چیت کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ بھارت مقبوضہ کشمیر کی حیثیت بدل کر جنگی جرائم کا ارتکاب کر رہا ہے۔

مقبوضہ کشمیر میں ماورائے عدالت قتل،تشدد اور گرفتاریوں اور انسانی حقوق کی مسلسل خلاف وزریوں پرتشویش کا اظہار کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ بھارتی غیر قانونی مقبوضہ کشمیر میں صورتحال سنگین ہے۔بھارت فوری طور پر غیر قانونی اقدامات واپس لے۔ انہوں نے وفد کو مقبوضہ کشمیر میں پانچ اگست کے غیر قانونی یکطرفہ بھارتی اقدامات سے آگاہ کیا۔ وزیراعظم نے کہا کہ بھارتی فورسز کی پیلٹ گنز سے متعدد کشمیری نوجوان بینائی سے محروم ہوچکے ۔کشمیری اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق حق خود ارادیت کا مطالبہ کررہے ہیں۔ بھارت ہندوتوا نظریے کے تحت مقبوضہ کشمیر کے لوگوں کو جدوجہد آزادی کی سزا دے رہا ہے۔وزیراعظم نے کہا کہ وادی میں کشمیریوں کے خودارادیت اور مذہبی آزادی کے حقوق سلب کیے جا رہے ہیں اور مقبوضہ کشمیر میں آبادیاتی تناسب میں تبدیلی کی بھارتی سازش پر کام ہو رہا ہے جو جنیوا کنونشن کی کھلی خلاف ورزی ہے۔
اسلامی تعاون تنظیم کے وفد کی پانچ اگست کے موقع پر پاکستان میں موجودگی اور وزیراعظم عمران خان سے ملاقات کشمیر کاز کے لئے تنظیم کی مکمل حمایت کا اظہار ہے۔ او آئی سی کے انسانی حقوق آزادکمیشن کا وفد کونسل کے وزرائے خارجہ کی طرف سے بھارتی غیر قانونی مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی بدترین صورتحال کا جائزہ لے رہا ہے۔