ٹاپ سٹوری

  • ٹاپ سٹوری
  • Apr 13, 2021

وزیراعظم عمران خان کی صدار ت میں وفاقی کابینہ کا اجلاس

پی ڈی ایم کا حکومت کو گھر بھیجنے کا بیانیہ دفن ہوگیا ہے۔ اپوزیشن جماعتیں اصلاحات کے عمل میں حصہ لیں حکومت انتخابی اصلاحات کے بعد عدالتی اصلاحات پر بھی بات کرنے کیلئے تیارہے۔ وفاقی کابینہ کے اجلاس کے بعد میڈیا بریفنگ میں وفاقی وزیر چوہدری فواد حسین نے کہا کہ پاکستان دنیا کی پانچویں بڑی ریاست ہے اور اسکے فیصلے کسی گروہ کے رحم کرم پر نہیں چھوڑ سکتے۔
وفاقی کابینہ کا اجلاس وزیراعظم عمران خان کی صدار ت میں ہوا۔ اجلاس کو بتایا گیا کہ کابینہ کاایجنڈا اور سمریز وغیرہ اگلے ہفتے سے ڈیجیٹل کرکے پیپر لیس کردیا جائیگا جس سے سالانہ اکاون کروڑ روپے کی بچت ہوگی۔ وفاقی وزیر اسد عمر نے بتایا کہ اگر اگلے دو ہفتوں میں کرونا پر کنٹرول نہ کیا گیا تو صورتحال سنگین ہوسکتی ہے۔ انھوں نے بتایا اس لہر میں سندھ اور بلوچستان زیادہ متاثر ہوسکتے ہیں۔ کابینہ نے کرونا سے بچاؤ کی ویکسین کی درآمد کے حوالے سے تجاوزیر تیارکرنے کیلئے وفاقی وزیر علی زیدی کی سربراہی میں کمیٹی کے قیام کی منظوری دی۔ اجلاس میں لاہور کے والٹن روڈ اور وحدت کالونی منصوبوں کا جائزہ لیا گیا۔ وفاقی کابینہ نےامن وامان کی صورتحال برقرار کھنے کیلئے لاہور،راولپنڈی ،گوجرانولہ ،جہلم اور بہاولپور میں رینجرزتعینات کرنے کی منظوری دی ۔
اجلاس کے بعد میڈیا بریفنگ میں وفاقی وزیر چوہدری فواد حسین نے کہا کہ حکومت اپوزیشن جماعتوں کے ساتھ انتخابی اور عدالتی اصلاحات سمیت دیگر معاملات پر مذاکرات کیلئے تیارہے۔
ایک مذہبی جماعت کی طرف سے پرتشدد مظاہروں کے بارے میں سوال پر چوہدری فواد حسین نے کہا کہ حکومت امن وامان کی صورتحال ہر صورت یقینی بنائے گی اور دنیا کی پانچویں بڑی ریاست کے فیصلے کسی گروہ کی ڈکٹیشن پر نہیں کرے گی۔
ایک سوال پر وفاقی وزیر نے کہا کہ کابینہ میں ردوبدل کا عمل آخری مرحلے میں ہے اور وزیراعظم جلد اس حوالے سے فیصلہ کرلیں گے۔