قومی

  • قومی
  • Apr 07, 2021

پاکستان اور روس وزراء خارجہ کی مشترکہ نیوز کانفرنس

وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ روس سے مستحکم تعلقات قائم کرنا چاہتے ہیں۔خوشی ہے کہ دونوں ممالک کے درمیان دوطرفہ تجارت میں اضافہ ہو رہاہے۔اسلام آباد میں روسی وزیرخارجہ سرگئی لیوروف کے ہمراہ مشترکہ نیوز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ پاکستان اور روس کے درمیان وفود کی سطح پر مذاکرات ہوئے ہیں جن میں اقتصادی، تجارتی اور دفاعی تعاون کے فروغ پرتفصیلی تبادلہ خیال ہوا ہے۔انہوں نے کہا کہ روس کے ساتھ دفاع اور انسداد دہشتگردی کے لئے تعاون کا فروغ چاہتے ہیں۔ انہوں نےبتایا کہ مذاکرات کے دوران دونوں ملکوں کے درمیان اقتصادی تعاون کے فروغ کے حوالے سے "بین الحکومتی کمیشن" کے اگلے اجلاس کے جلد انعقاد پر اتفاق کیا گیا۔
وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے کہاکہ وزیر اعظم عمران خان اور صدر پیوٹن کے مابین متواتر رابطہ، دو طرفہ تعلقات کے استحکام کا مظہر ہے۔انہوں نے کہاکہ پاکستان نے اپنی جغرافیائی سیاسی ترجیحات کو جغرافیائی معاشی ترجیحات میں تبدیل کیا ہے ۔انہوں نے کہاکہ حکومت بیرونی سرمایہ کاروں کو پاکستان میں سرمایہ کاری کیلئے ای ویزہ سمیت بہت سی سہولیات فراہم کر رہی ہے ۔پاکستان، روس کے اشتراک سے"سٹریم گیس پائپ لائن منصوبے" کے جلد آغاز کیلئے پر عزم ہے ۔
وزیر خارجہ نے کہا کہ انہوں نے اپنے روسی ہم منصب کو افغانستان اور مقبوضہ کشمیر میں جاری انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں اور علاقائی امن کو درپیش خطرات سے بھی آگاہ کیا۔انہوں نے کہا کہ افغانستان میں قیام امن کے حوالے سے روس کی کاوشیں قابل تعریف ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان، افغانستان میں قیام امن سمیت خطے میں قیام امن کیلئے اپنا مصالحانہ کردار خلوص نیت سے ادا کرتا آ رہا ہے ۔
شاہ محمود قریشی نے کہا کہ پاکستان خطے میں امن کا خواہاں ہے اور مسئلہ کشمیر سمیت تمام تنازعات کے پر امن حل کا حامی ہے ۔
روسی وزیر خارجہ نے کہا کہ پاکستان اور روس کےدرمیان اقتصادی تعاون کے فروغ کے لئے مزید اقدامات کی ضرورت ہے۔انہوں نے پرتپاک خیر مقدم پر وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا شکریہ ادا کیا ۔انہوں نے کہا کہ دو طرفہ اقتصادی، تجارتی و دفاعی تعاون کے فروغ سمیت باہمی دلچسپی کے شعبوں میں دو طرفہ تعاون بڑھانے کا عزم رکھتے ہیں۔