ٹاپ سٹوری

  • ٹاپ سٹوری
  • Mar 01, 2021

وزیراعظم کا تاریخی مقامات کے تحفظ اور عالمی سیاحت کو فروغ دینے پر زور

وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ سیاحتی مقامات اور تاریخی ورثے کی حفاظت آئندہ نسلوں کو پاکستان کے قیمتی تاریخی اور ثقافتی ورثے سے آگاہ کرنے کیلئے ضروری ہے۔
انہوں نے اتوار کے روز ضلع جہلم میں قلعہ نندانہ میں ثقافتی ٹریل کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اس اقدام سے سیاحت کو فروغ حاصل ہو گا اور نوجوانوں کیلئے روزگار کے مواقع پیدا ہوں گے۔
انہوں نے کہا کہ بدقسمتی سے ملک میں تاریخی مقامات کے تحفظ اور بحالی پر توجہ نہیں دی گئی۔ انہوں نے کہا کہ حال ہی میں ہری پور سے بدھاکے چالیس فٹ کے مجسمے کی دریافت پاکستان کے عظیم ثقافتی ورثے کی عکاس ہے۔
عمران خان نے کہا کہ ہمیں اپنی آئندہ نسلوں کی خاطر اور دنیا بھر سے سیاحوں کو راغب کرنے روزگار کے مواقع پیدا کرنے اور آمدن کے حصول کیلئے ان مقامات کا تحفظ کرنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان میں کوہستان نمک کے علاقے میں ابھی دریافت کا سلسلہ شروع نہیں کیا گیا۔
وزیراعظم نے تاریخی مقامات کے تحفظ اور سیاحوں کو بہتر سہولتوں کی فراہمی کیلئے باغاں والا کو علاقے کے جدید گائوں کے طور پر ترقی دینے کا اعلان بھی کیا۔
قلعہ نندانہ کے گردونواح میں چھ دیگر تاریخی اور ثقافتی اہم مقامات ہیں جن میں نندانہ مندر کٹاس مندر کھیوڑہ نمک کی کان Malut قلعہ Malut مندر اور تخت بابری شامل ہیں۔ یہ مقامات ثقافتی ٹریل کا حصہ ہوں گے اور سیاح ایک ساتھ یہ تمام مقامات دیکھ سکیں گے۔
وزیراعظم ان ثقافتی مقامات کے تحفظ اور انہیں عالمی سیاحتی مقامات میں تبدیل کرنے میں گہری دلچسپی رکھتے ہیں۔
وزیر اعظم کے وژن کے تحت پاکستان کی تاریخ اور قومی ورثے کو اُجاگر کرنے کیلئے ملک بھر میں مقامات کی نشاندہی کی جا رہی ہے۔ سیاحت کے فروغ سے مقامی آبادی کو بھی معاشی فوائد حاصل ہوں گے۔
وزیراعظم عمران خان نے ٹلہ جوگیاں اور سالٹ رینج نیشنل پارک کا بھی افتتاح کیا۔
یہ دونوں پارکس محفوظ شدہ چھ پارکس کا حصہ ہیں جن میں خیری مورت نیشنل پارک چھانجی نیشنل پارک نمل ویٹ لینڈ اور چشمہ ویٹ نیچر Reserveشامل ہیں۔
وزیراعظم نے اس موقع پر زیتون کا پودا بھی لگایا۔
انہیں جنگی حیات کے تحفظ اور سالت رینج میں ماحولیاتی تحفظ کے حوالے سے اٹھائے گئے اقدامات کے بارے میں بھی بریفنگ دی گئی۔
عمران خان مقامی لوگوں میں بھی گُھل مل گئے اور ان کے مسائل سنے۔
مقامی لوگوں کے مطالبات کا جواب دیتے ہوئے وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے یقین دلایا کہ جہلم کے عوام کو درپیش تمام مسائل کو ترجیحی بنیادوں پر حل کیا جائے گا۔
وفاقی وزیر سائنس و ٹیکنالوجی چوہدری فواد حسین اور بیرون ملک پاکستانیوں اور انسانی وسائل کی ترقی کے بارے میں وزیراعظم کے معاون خصوصی ذوالفقار حسین بخاری بھی اس موقع پر موجود تھے۔