قومی

  • Feb 20, 2021

سینیٹ انتخابات اوپن بیلٹ کے زریعے کرانے سے متعلق ریفرنس کی سماعت

سپریم کورٹ نے کہا ہے کہ آئین کے مطابق سینیٹ انتخابات متناسب نمائندگی کے طریقہ کار کے تحت ہوتے ہیں ۔سینیٹ انتخاب میں کسی سیاسی جماعت کی طرف سے حاصل کی گئی نشستیں اس کی صوبائی اسمبلی کی نشستوں کا عکاس ہوتی ہیں۔
چیف جسٹس گلزاراحمدکی سربراہی میں پانچ رکنی بنچ کے روبرو سینیٹ انتخابات اوپن بیلٹ کے ذریعے کرانے سے متعلق صدارتی ریفرنس میں دلائل دیتے ہوئے رضا ربانی نے موقف اختیار کیاکہ سینیٹ کے ذریعے صوبوں کو وفاق میں نمائندگی دی گئی ہے تاکہ وہ قانون سازی کے عمل میں شریک ہوسکیں ۔انہوں نے کہاکہ بہت کم ایساہوتاہے کہ سینیٹ اور قومی اسمبلی میں ہم آہنگی ہو ۔قومی اسمبلی اکثریت کےجبکہ سینیٹ اقلیت کے حقوق کاتحفظ کرتی ہے ۔رضاربانی نے کہاکہ سیاسی اتحاد کی بنیادپر کسی سیاسی جماعت کی سینیٹ میں نشستیں صوبائی اسمبلی کی نمائندگی سے کم یا زیادہ ہوسکتی ہیں ۔ سماعت کے آغاز پر عدالتی ہدایت کےمطابق الیکشن کمیشن نے سینیٹ انتخابات میں ووٹر کےلئے ضابطہ اخلاق کے دستاویز عدالت میں پیش کردی ۔صدارتی ریفرنس کی آئندہ سماعت پیر کوہوگی رضاربانی د لائل جاری رکھیں گے ۔