قومی

  • قومی
  • Sep 15, 2020

سینیٹ اجلاس

پارلیمانی امورکے لئے وزیراعظم کے مشیر ڈاکٹر بابر اعوان نے وقفہ سوالات میں سینیٹ کوبتایاکہ صوبہ خیبرپختونخوا اور پنجاب میں بلدیاتی انتخابات کےلئے نئی حلقہ بندیاں کرلی گئی ہیں ۔انہو ں نے کہاکہ یہ نئی حلقہ بندیاں صرف بلدیاتی انتخابات کےلئے ہیں ۔ان کا عام انتخابات سے کوئی تعلق نہیں ۔انہوں نے کہاکہ بلوچستان میں حلقہ بندیوں کےحوالے سے بلوچستان ہائی کورٹ نے ڈیڑھ سال سے حکم امنتاع جاری کررکھاہے جسکی وجہ سے بلوچستان میں نئی حلقہ بندیوں کا عمل شروع نہیں کیاجاسکا ۔کالاباغ ڈیم کے معاملے پر اظہارخیال کرتےہوئے ڈاکٹربابر اعوان نے کہاکہ کالاباغ ڈیم کی تعمیرکافیصلہ مشترکہ مفادات کونسل میں ہوگا یہ آئینی ادارہ ہے اس میں تمام صوبوں کی نمائندگی موجود ہے ۔چیئرمین سینیٹ نے رولنگ دیتےہوئے کہاکہ کالاباغ ڈیم کی تعمیر چاروں صوبوں کی رضامندی اور مشترکہ مفادات کونسل کے فیصلے سے مشرو ط ہے ۔پارلیمانی امورکے وزیرمملکت علی محمد خان نے ایوان کوبتایاکہ وزیراعظم عمران خان نے لاہورموٹروے واقعے کا سخت نوٹس لیاہے ۔انہوں نے کہاکہ حکومت بچوں ،لڑکیوں یاعورتوں سے جنسی جرائم کرنے والوں کو سخت سے سخت سزا دینے کی حامی ہے اورا س حوالےسے قانون سازی بھی کی جارہی ہے۔موٹروے واقعے پر اظہارکرتےہوئے سینیٹرپرویز رشید،ڈاکٹرآصف کرمانی ،شیریں رحمان ،اورنگزیب خان ،محسن عزیز ،میاں رضاربانی ،بیرسٹرسیف اورمشاہداللہ خان نےکہاکہ یہ واقعہ انتہائی افسوسناک اور معاشرے کی بیمار ذہنیت کی عکاسی کرتاہے انہوں نے کہاکہ ایسے واقعات کی مستقبل میں روک تھام کےلئے قانون سازی سمیت متعلقہ اداروں کوبھی اپنا فعال کردار ادا کرناہوگا ۔اجلاس میں بلوچستان سے نومنتخب سینیٹرمیرخالد بزنجو نے سینیٹ کی رکنیت کا حلف بھی اٹھایا ۔اجلاس میں کراچی میں عمارت گرنے ،مہمند میں ماربل کی کان کے حادثے ،جنوبی وزیرستان میں دہشتگردی کے واقعے میں اور بارشوں سے سیلابی صورت حال میں جاں بحق ہونے والے افراد کےلئے فاتحہ خوانی بھی کی گئی ۔