ٹاپ سٹوری

  • ٹاپ سٹوری
  • Dec 02, 2019

وزیراعظم کی صدارت میں حکومتی معاشی ٹیم کااجلاس

وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ مشکل معاشی حالات کے باوجود حکومتی اقدامات کے نتیجے میں اقتصادی استحکام آیا ہے ۔کارباری برادری کے اعتماد کو مزید تقویت دینے کیلئے ضروری ہے کہ برآمد کنندگان، چھوٹے اور درمیانے درجے کے تاجروں کو ہر ممکن سہولت فراہم کی جائے۔اسلام آباد میں حکومت کی معاشی ٹیم کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے وزیر اعظم نے ایف بی آر کو ہدایت کی کہ ایکسپورٹرز کیلئےریفنڈز کی ادائیگیوں کے نظام کو مزید آسان بنایا جائے ۔
اجلاس کوبریفنگ میں بتایا گیا کہ گزشتہ سال کے مقابلے میں رواں سال اکتوبر میں برآمدات میں چھ فیصد اضافہ جبکہ نومبر میں 9 اعشاریہ 6فیصد اضافہ ہواہے۔ وزیراعظم نے مثبت رجحان پر اطمینان کا اظہار کیا۔
اٹارنی جنرل نے اجلاس کو بتایا کہ اعلیٰ عدلیہ میں ایف بی آر سےمتعلق1089کیسز میں سے 551کا فیصلہ ہو چکاہے ۔ وزیر اعظم نے اٹارنی جنرل کو ہدایت کی کہ زیر التوا کیسز کے جلد حل کیلئے کوششیں تیز کی جائیں۔ مقدمات کے جلد حل سے کاروباری برادری کے مسائل حل ہونگے اور کاروباری معاملات میں آسانی پیدا ہوگی۔ معاون خصوصی پٹرولیم نے ٹاپی گیس پائپ لائن پر پیش رفت سے شرکاء کو آگاہ کیا۔
اجلاس کو بتایا گیا کہ وزیرِ اعظم کی ہدایت پر ترقیاتی منصوبوں کا ماہانہ اور ششماہی جائزہ لیا جا رہا ہے اور پیشرفت پر نظر رکھنے کیلئے آن لائن نظام شروع کیا جا رہا ہے ۔اجلاس کو لاہور میں فوڈبنک پروگرام کے اجراء بارےبھی آگاہ کیا گیا۔
وزیر اعظم نے کہا کہ معاشی استحکام اور روزگار کے مواقع پیدا کرنا حکومت کی ترجیح ہے۔ اس مقصد کے لئے آؤٹ آف باکس تجاویز پیش کی جائیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کی تمام تر توجہ عام آدمی کو ریلیف دینے پر مرکوز ہے۔