بین الاقوامی

  • بین الاقوامی
  • Oct 18, 2019

شمالی شام میں کُردوں کے خلاف ترک فوج کا آپریشن پانچ روز تک معطل کرنے پر اتفاق

امریکہ اور ترکی کے درمیان شمالی شام میں کُردوں کے خلاف ترک فوج کا آپریشن پانچ روز تک معطل کرنے پر اتفاق ہوگیا ہے۔
یہ بات امریکہ کے نائب صدر مائیک پنس نے انقرہ میں ترک صدر رجب طیب اردوان سے ملاقات کے بعد صحافیوں سے گفتگو میں کہی۔انہوں نے کہا کہ معاہدے کے تحت پانچ دن کے لئےجنگ بندی ہوگی اور امریکہ کُرد جنگجوؤں کو وہاں سے نکلنے میں مدد فراہم کرے گا۔
اس سے پہلے مائیک پینس نے انقرہ میں ترکی کے صدر رجب طیب اردوان سے ملاقات کی جس میں شام کے شمال مشرقی علاقے میں کُرد تنظیم "وائی پی جی" کے خلاف ترکی کی آٹھ روز سے جاری فوجی کارروائی سے پیدا ہونےو الے بحران پر تبادلہ خیال کیا گیا۔مائیک پینس نے صدر رجب طیب اردوان سے فوجی کارروائی روکنےکا مطالبہ کیا۔ترک صدر سے ملاقات کے بعد ترکی اور امریکہ کے درمیان وفود کی سطح پر بھی بات چیت ہوئی۔
ترک وزیر ِ خارجہ میولود چاوش اولو نے صحافیوں کو بتایا کہ شمالی شام میں ترک فوج کی پیشقدمی مستقل طور پر صرف اس وقت ختم ہوگی جب "وائی پی جی"کے جنگجومکمل طور پر سرحدی علاقہ خالی نہیں کر دیتے۔انہوں نے کہا کہ ہم اپنا آپریشن محظ معطل کر رہے ہیں۔ صرف اُس وقت ختم کریں گے جب کردمسلح گروپ "وائی پی جی"پورا علاقہ خالی کر نہ دے۔
امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ پر "شکریہ اردوان" کے عنوان سے اپنا پیغام شیئر کیا ۔ صدر ٹرمپ نے اپنے ٹویٹ میں کہا کہ ترکی نےملٹری آپریشن بند کرنے پر رضا مندی کا اظہار کیا ہے یہ بڑی خبر ہے اورترکی کے اس فیصلے سے لاکھوں افرادکی جانیں بچ جائیں گی۔