بین الاقوامی

  • بین الاقوامی
  • Oct 16, 2019

ترکی نےشام میں فوجی کارروائی روکنے کی امریکی تجویز مستردکر دی

شام میں کُرد تنظیم "وائی پی جی" کے خلاف ترک فوج کا آپریشن آج آٹھویں روز بھی جاری ہے۔
ترک وزارت دفاع کے مطابق فوجی آپریشن میں اب تک "وائی پی جی" کےچھ سو سینتیس جنگجو ہلاک ہوچکے ہیں۔ترکی نے "وائی پی جی"کو دہشت گرد تنظیم قرار دے رکھا ہے۔دوسری جانب شامی فوج کے دستے سرحدی شہر مَنبج پہنچنا شروع ہو گئے ہیں۔ روسی وزارت دفاع نے بھی اس بات کی تصدیق کی ہے کہ منبج شہر کے وسیع علاقے کا کنٹرول شامی فوج نے سنبھال لیا ہے۔
اس سے پہلےانقرہ میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے ترکی کے صدر رجب طیب اردوان نے شمالی شام میں کُردوں کے خلاف فوجی کارروائی روکنے کی امریکی تجویز مسترد کر دی۔ صدر اردوان نے کہا کہ انہیں امریکی پابندیوں سےکوئی پریشانی نہیں۔امریکہ ہمیں جنگ بندی کے اعلان کا کہہ رہا ہے لیکن ہم ایسا کبھی نہیں کریں گے۔انہوں نے کہا کہ ترک سرحد سے دہشتگرد تنظیم کے خاتمے تک جنگ بندی ممکن نہیں۔ شام میں فوجی کارروائی کیخلاف ایکشن لیتے ہوئے امریکہ نے ترکی کے تین وزرا پر پابندیاں عائد کر دی ہیں اور ان کے امریکہ میں اثاثے منجمد کرنے کا بھی اعلان کیاہے۔