قومی

  • قومی
  • Oct 09, 2019

مقبوضہ وادی میں بھارتی جبری تسلط کاآج 66 واں روز

مقبوضہ وادی میں بھارتی جبری تسلط کاآج 66 واں روز ہے۔کاروبار زندگی تاحال معطل ہے۔فوجی محاصرے اور مواصلاتی ذرائع کی معطلی کی وجہ سے معمولات زندگی بری طرح متاثر ہیں۔مقبوضہ کشمیر میں چھاپوں، گرفتاریوں اورلوگوں کے جاں بحق ہونے کی اطلاعات ہیں۔ بازار بند ہونے اور سڑکوں پرٹریفک معطل ہونے کے باعث لوگوں کو ضروری اشیاکی شدید قلت کا سامنا ہے ۔
مقبوضہ وادی میں بھارتی مظالم کی وجہ سے انسانی المیہ جنم لینے لگا، گھروں میں محصور کشمیری قابض فوج کی بربریت کا شکار، قابض فوج رات گئے لوگوں کے گھروں میں دھاوا بول دیتی ہے۔گزشتہ روز بھاری فوج نے سرچ آپریشن کی آڑ میں دو نوجوانوں کو شہید کر دیا۔ بھارتی فوج بارہ روز سے کپواڑہ، بارہ مولا، سری نگر، کلگام، شوپیاں سمیت مختلف علاقوں میں سرچ آپریشن جاری رکھے ہوئے ہے۔
66 روز سے گھروں میں قید کشمیریوں تک ضروریات زندگی کی کسی بھی چیز کی رسائی ممکن نہیں۔ سیبوں کے بعد اخروٹ کے کاشتکار بھی کرفیو کی وجہ سے پریشان ہو گئے۔ قرضے لے کر کھیتی کرنے والے کشمیری کسان پھل پکنے کے بعد منڈیوں تک نہیں پہنچا سکے۔