بین الاقوامی

  • بین الاقوامی
  • Sep 16, 2019

امریکی صدر کی سعودی ولی عہد سے ٹیلی فون پر گفتگو

امریکہ کےصدرڈونلڈ ٹرمپ نے سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان سے ٹیلی فون پر بات چیت میں کہا کہ امریکہ، سعودی عرب کی سلامتی اور استحکام میں مدد دینے کو تیار ہے۔انھوں نے کہا سعودی آرامکو کی تیل کی تنصیبات پر دہشت گردی کے حملوں سےامریکی اور عالمی معیشت پرمنفی اثرات مرتب ہوں گے۔ سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے امریکی صدر کی پیش کش کے جواب میں کہا کہ سعودی عرب اس طرح کی دہشت گردانہ جارحیت سے نمٹنے کی صلاحیت اور عزم رکھتا ہے۔

امریکہ نے سعودی عرب کی تیل کی تنصیبات پر ہونے والے ڈرون حملوں کا الزام ایران پر عائد کیا ہے۔
امریکی خارجہ مائیک پومپیو نے یمن کے حوثی باغیوں کے اس دعوے کو مسترد کردیا ہے جس میں انھوں نے بقیق اور خریص میں سعودی تیل کمپنی ۔۔آرامکو۔۔ پر حملوں کی ذمہ داری قبول کی ہے۔مائیک پومپیو نےاپنے ٹویٹرپیغام میں امریکی وزیر خارجہ نے کہا کہ اس بات کا کوئی ثبوت نہیں کہ ڈرون یمن سے آئے۔انھوں نے اس واقعہ کو دنیا کی توانائی کی فراہمی پر ایک غیر معمولی حملہ قرار دیا ہے۔مائیک پومپیو نےتمام ممالک سے مطالبہ کیا کہ ایران کی جانب سے کیے گئے اس حملے کی عوامی سطح پر مذمت کریں۔انھوں نے اس بات پر زور دیا کہ امریکہ اپنے اتحادیوں کے اشتراک سے کوشش کرے گا کہ توانائی کی منڈیوں میں تیل کی فراہمی بغیر رکے جاری رہے۔