ٹاپ سٹوری

  • ٹاپ سٹوری
  • Sep 10, 2019

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا انسانی حقوق کونسل پرکشمیر میں تحقیقات کیلئے انکوائری کمیشن تشکیل دینے پرزور

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کونسل پر زور دیا کہ وہ مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی کھلی اور سنگین خلاف ورزیوں کی تحقیقات کے لئے ایک انکوائری کمیشن تشکیل دے۔

انہوں نے یہ بات منگل کے روز جنیوا میں انسانی حقوق کونسل کے بیالیسویں اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ کونسل کو نہتے کشمیریوں کے انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کے ذمہ داروں کو انصاف کے کٹہرے میں لانے کے لئے اقدامات کرنے چاہئیں۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ اگر بھارت کے پاس چھپانے کے لئے کچھ نہیں ہے تو اسے انکوائری کمیشن کو بلارکاوٹ مقبوضہ کشمیر میں رسائی دینی چاہئے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان مجوزہ انکوائری کمیشن آزادکشمیر تک رسائی دینے کیلئے تیار ہے اسی طرح رسائی مقبوضہ جموں و کشمیر میں بھی دی جانی چاہئے۔

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کونسل کو مقبوضہ کشمیر میں فوری طور پر کرفیو اٹھانے، محاصرہ ختم کرنے اور ذرائع مواصلات کی بحالی کے لئے بھارت پر دباؤ ڈالنا چاہئے۔

بھارت سے مقبوضہ وادی میں پیلٹ گنوں کے استعمال ،خونریزی کا سلسلہ بند کرنے اور بنیادی آزادیاں بحال کرنے کے لئے بھی کہا جائے۔

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ انسانی حقوق کونسل کو ہائی کمشنر کے دفتر اور انسانی حقوق کونسل کے خصوصی نظام کا مینڈیٹ رکھنے والوں کو یہ اختیار دیا جانا چاہئے کہ وہ مقبوضہ کشمیر میں بھارت کی جانب سے انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کا جائزہ لیں اور اس حوالے سے رپورٹ تیار کریں اور کونسل کو باقاعدگی سے آگاہ کریں۔

شاہ محمود قریشی نے خبردار کیا کہ بھارت دوبارہ جعلی فلیگ آپریشن اور دہشت گردی کر سکتا ہے جس کا مقصد مقبوضہ کشمیر میں مظالم سے عالمی توجہ ہٹانا ہے۔