قومی

  • قومی
  • Jul 23, 2019

وزیراعظم عمران خان کا فوکس نیوزکوانٹرویو

وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ پاکستان اوربھارت کے درمیان تنازعات کی اصل جڑمسئلہ کشمیرہے۔72سال سےحل طلب مسئلہ کشمیرکوحل کئے بغیرخطے میں امن ممکن نہیں ۔امریکہ واحدملک ہےجوپاکستان اوربھارت میں ثالثی کراسکتاہے۔واشنگٹن میں فوکس نیوزکوانٹرویووزیراعظم عمران خان نے کہا کہ ایٹمی جنگ کوئی آپشن نہیں ۔بھارت جوہری ہتھیارترک کردے۔ پاکستان بھی ایٹمی ہتھیاراستعمال نہیں کرے گا۔انھوں نے کہا کہ پاکستان کاانتہائی جامع اورموثر جوہری کمانڈاینڈکنٹرول سسٹم موجودہے۔
وزیر اعظم نے کہا کہ دہشتگردی کیخلاف جنگ میں 70ہزارسےزائدقیمتی جانیں ضائع ہوئیں۔پاکستانی مسلح افواج پیشہ وراورہرطرح کے چیلنج سے نمٹنے کی صلاحیت رکھتی ہے۔
وزیر اعظم نے کہا کہ امریکہ اورپاکستان دہشتگردی کیخلاف جنگ میں قریبی اتحادی رہے ہیں۔ماضی میں عدم اعتمادکی فضاسے دونوں ملکوں کونقصان اٹھاناپڑا۔
وزیر اعظم نے کہا کہ طاقت کے استعمال سے افغانستان میں امن قائم نہیں ہوسکتا ۔امریکہ نے4دہائیوں تک افغانستان میں جنگ لڑی لیکن امن قائم نہیں ہوسکا۔ انھوں نے کہا کہ افغان عمل میں طالبان کوسیاسی عمل کاحصہ بنایاجاناضروری ہے ۔آزادانہ انتخابات کےبعدہی افغا نستان میں امن کاقیام ممکن ہے۔وزیراعظم نے کہا کہ طالبان مقامی جنگجوہیں جوافغانستان سے باہرکارروائی نہیں کرتے۔
وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ امریکہ ایران تنازعے سےخطے کاامن اورمعیشت متاثرہونے کاخطرہ ہے۔انھوں نے کہا کہ امریکہ شکیل آفریدی کی بات کرتاہےتوہم عافیہ صدیقی کامسئلہ بھی اٹھائیں گے۔