بین الاقوامی

  • بین الاقوامی
  • Jul 16, 2019

یورینیم افزودگی سے متعلق ایرانی اقدامات قابل واپسی ہیں:فیڈریکا موغرینی

یورپی یونین کی خارجہ امور کی سربراہ فیڈریکا موغرینی نے کہا ہے کہ یورینیم افزودگی سے متعلق ایرانی اقدامات قابل واپسی ہیں اور ایران کو دوہزارپندرہ کے ایٹمی معاہدے کی مکمل پاسداری کرنی چاہیئے۔
برسلز میں یورپی وزرائے خارجہ کے اجلاس کے بعد نیوزبریفنگ میں فیڈریکا موغرینی نے یورینیم افزودگی میں اضافے سے متعلق ایرانی اقدامات پر تشویش کا اظہار کیا اور کہا کہ یہ اقدامات قابل واپسی ہیں۔انہوں نے کہا کہ ایران کے ساتھ دوہزار پندرہ میں طے پانے والے ایٹمی معاہدے کے ختم ہونے کےکوئی امکانات نہیں۔ یورپی وزرائے خارجہ کے اجلاس میں ایران کے ساتھ کشیدگی میں کمی اور ایٹمی معاہدے کو برقرار رکھنے کے طریقوں پر غور کیا گیا۔اس سے پہلے فرانس کے قومی دن کے موقع پر جاری ہونے والے ایک مشترکہ بیان میں برطانیہ، جرمنی اور فرانس کے رہنماؤں نے کہا تھا کہ اب وقت آ گیا ہے کہ ایران کے ساتھ ایٹمی معاہدے کو برقرار رکھنے کے لیے ذمہ داری سے کام کیا جائے۔دوسری جانب ایران کے صدر حسن روحانی نے کہا ہے کہ اگر امریکہ، ایران پر عائد پابندیاں اٹھا لے اور دوہزار پندرہ کے ایٹمی معاہدے میں دوبارہ شریک ہوجائے تو ایران مذاکرات کے لئے تیار ہے۔