ٹاپ سٹوری

  • ٹاپ سٹوری
  • Apr 18, 2019

اورماڑہ:بزئی ٹاپ کے مقام پر دہشتگردوں کی فائرنگ،14افراد جاں بحق

اورماڑہ ہنگول نیشنل پارک کے قریب بزئی ٹاپ کے مقام پر دہشتگردوں کی فائرنگ سے 14افراد جاں بحق ہوگئے ہیں ۔لیویز ذرائع کےمطابق جاں بحق افراد کی لاشیں درمان جاہ ہسپتال اورماڑہ منتقل کر دی گئیں۔ واقعے کے فوراََ بعد سیکیورٹی فورسز نے علاقے کو گھیرے میں لے کر آپریشن شروع کر دیا۔ پاک بحریہ کے ترجمان کے مطابق دہشتگرد حملے میں شہید چودہ افراد میں پاک بحریہ کے اہلکار بھی شامل ہیں۔
صدر ڈاکٹر عارف علوی اوروزیراعظم عمران خان نے بزئی ٹاپ کے مقام پر دہشتگرد حملے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتےہوئے واقعے کی رپورٹ طلب کرلی ہے۔وزیراعظم نے کہاکہ وحشیانہ واقعے میں معصوم افرا د کو ہدف بنایاگیا ہے۔وزیراعظم نے متعلقہ حکام کو ہدایت کی کہ دہشتگرد حملے کے ذمہ داروں کی شناخت کےلئے ہرممکن کوششیں کی جائیں اور انہیں انصاف کے کٹہرے میں لایاجائے ۔وزیراعظم عمران خان نے متاثرہ خاندانوں کے ساتھ ہمدردی کا اظہار کیاہے ۔
صدر ڈاکٹر عارف علوی نے واقعہ میں قیمتی انسانی جانوں کے ضیاع پر گہرےدکھ اورغم کا اظہار کرتے ہوئے شہداء کے درجات کی بلندی کے لئے دعا کی۔ صدر مملکت نے کہا کہ قوم دہشتگردی کے خلاف جنگ میں متحد اور پرعزم ہے۔ملک میں فساد پھیلانے کی کوششیں کامیاب نہیں ہوں گی۔وزیراطلاعات فواد چوہدری نے کوئٹہ میں ہزارہ کمیونٹی پر حملے ،حیات آباد میں دہشت گردواقعے اور بزئی ٹاپ حملے کو منظم سازش قراردیاہے ۔سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹویٹر پراپنے پیغام میں وزیراطلاعات نے کہاکہ ہم نے امن کےلئے بہت قربانی دی ہے ۔ہم ان واقعات کے ذمہ داروں کو مثال عبرت بنائیں گے ۔وزیراطلاعات نے کہاکہ ہم دہشتگردی کی جنگ میں بڑی کامیابیاں حاصل کی ہیں لیکن یہ جنگ ابھی ختم نہیں ہوئی ۔
وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان نے واقعے کی شدید مذمت کرتےہوئے دہشتگردوں کے خلاف بھرپور کارروائی کی ہدایت کی ہے ۔ وزیراعلی بلوچستان نے کہاکہ بزدل دہشتگردوں نے بربریت کی انتہاکردی ۔امن کے دشمن بیرونی اشاروں پر لوگوں کاخون بہا رہے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ بلوچستا ن کے عوام بیرونی عناصر کے ایجنڈے پر عمل پیرا دہشتگردوں کو نفرت کی نگاہ سے دیکھتے ہیں ۔وزیراعلی بلوچستان نے دہشتگرد واقعے کو ملک کو بدنام کرنے اور بلوچستان کی ترقی روکنے کی گھناؤنی سازش قراردیا ۔وزیراعلی بلوچستان نے کہاکہ ترقی اور امن کا سفر ہر صورت جاری رہے گا بلوچ عوام کی تائید اور حمایت سے دہشتگردی کاخاتمہ اور دہشتگردوں کو کیفر کردار تک پہنچائیں گے۔داخلہ امور کے وزیر مملکت شہریار آفریدی واقعے کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہاکہ دشمن پاکستان کو ایف اے ٹی ایف اور دیگر عالمی فورم پر نقصان پہنچانا چاہتا ہے۔ شہریار آفریدی نے کہا کہ دہشت گردوں کو انکی کمین گاہوں سے نکال کر عبرت کا نشان بنائیں گے۔وزیر مملکت داخلہ نے کہا کہ سیاسی جماعتوں اور اداروں کو متحد ہو کر دہشتگردی کے خلاف حکومت کے ہاتھ مضبوط کرنا ہونگے۔بلوچستان کے وزیرداخلہ میر ضیاء لانگو نے میڈیا سے بات چیت کرتےہوئے کہاکہ جلد ملزموں تک پہنچ جائیں گے ۔گرفتاری کےلئے ٹیمیں تشکیل دے دی گئی ہیں انہوں نے کہاکہ عوام کے جان ومال کا تحفظ ہماری ذمہ داری ہے ۔دہشت گرد واقعے میں ملوث افراد کو کسی صورت معاف نہیں کریں گے۔وزیراعلی پنجاب سردار عثمان بزدار نے بھی واقعے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتےہوئے متاثرہ خاندانوں کےساتھ ہمدردی کا اظہارکیاہے ۔
سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر اور ڈپٹی سپیکر قاسم خان سوری نے ہنگول نیشنل پارک بزئی ٹاپ میں ہونے والے دہشت گردی کی شدید مذمت کی ہے۔سپیکر اور ڈپٹی سپیکر نے اس واقعے کے نتیجے میں ہونے والے جانی نقصان پر گہرے دْکھ اور افسوس کا اظہار کیا ہے۔
چیئرمین سینٹ محمد صادق سنجرانی نے واقعے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ دہشت گرد ملک کے امن و امان کو سبوتاژ کر کے اپنے مذموم مقاصد میں کامیاب نہیں ہو سکتے۔ چیئرمین سینیٹ نے کہا کہ پرامن ماحول کو خراب کرنے کی ہرسازش کو ہر صورت ناکام بنایا جائے گا ۔ڈپٹی چیئرمین سینیٹ سینیٹر سلیم مانڈوی والا ، سینیٹ میں قائد ایوان سینیٹرسید شبلی فراز ،سینیٹ میں قائد حزب اختلاف سینیٹرراجہ محمد ظفرالحق نے بھی واقعے کی شدید الفاظ میں مذمت کی ۔