قومی

  • قومی
  • Mar 18, 2019

حکومت کانیشنل ایکشن پلان : وزیر خارجہ شاہ محمودقریشی کےپارلیمانی قائدین کو خطوط

حکومت نےقومی اموراورنیشنل ایکشن پلان پرپارلیمانی جماعتوں سے مشاورت کا فیصلہ کیاہے۔۔۔وزیر اعظم عمران خان کی خصوصی ہدایت پر
وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی نےمشاورت کےلیےپارلیمانی قائدین کو خطوط ارسال کر دئیےہیں۔
پارلیمانی جماعتوں کی مشاورتی کانفرنس 28مارچ کو شام 4بجے پارلیمنٹ ہاؤس میں ہوگی۔۔
پارلیمانی قائدین کے نام خط میں وزیر خارجہ نے کہا کہ دہشت گردی کے خلاف ہماری جہد مسلسل کےعزم کے اعادے کیلئے تمام سیاسی جماعتوں کو شرکت کی دعوت دیتا ہوں۔ دسمبر 2014 میں آرمی پبلک اسکول پشاور کے المناک واقعے کے بعد تمام سیاسی جماعتوں کی مشاورت سے نیشنل ایکشن پلان مرتب ہوا، جو قومی اتفاق رائے کا مظہر تھا۔
شاہ محمود قریشی نے کہا کہ دہشت گردی کے خاتمے کے لئے نیشنل ایکشن پلان کے مختلف پہلو ہیں۔ جس میں کسی دوسرے ملک کے خلاف اپنی سرزمین استعمال نہ ہونے د نیا ، اقوام متحدہ کی پابندیوں سے متعلق ذمہ داریاں اورانسداد دہشت گردی کی مالی معاونت سے متعلق عالمی تقاضوں پر عمل درآمداس کا اہم حصہ ہیں۔
وزیر خارجہ نے کہا کہ نیشنل ایکشن پلان پر عمل درآمد واضح طور پر پاکستان کے عوام کےطویل مدتی مفادمیں ہے۔یہ مشاورت پاکستان کی قومی حکمت عملی پرتیزی سے عملدرآمدکےلیےہمارےعزم کےتسلسل اور اس کی اہمیت کو دنیا میں اجاگر کرے گی۔