بین الاقوامی

  • بین الاقوامی
  • Mar 14, 2019

امریکی نمائندہ خصوصی زلمے خلیل زاد کا ٹؤئٹ

افغان مفاہمتی عمل کیلئے امریکا کے نمائندہ خصوصی زلمے خلیل زاد نے طالبان کے ساتھ مذاکرات کو مثبت قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ امن کے امکانات میں اضافہ ہوا ہے۔
سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹویٹر پر جاری بیان میں زلمے خلیل زاد نے لکھا کہ طالبان کے ساتھ قطر میں مذاکرات کا دور مکمل ہوا،،، واضح ہو گیا کہ تمام فریق جنگ کا خاتمہ چاہتے ہیں۔زلمے خلیل زاد نے اپنی ٹویٹ میں لکھا کہ افغانستان میں امن کے لیے چار مسائل پر اتفاق ضروری ہے جس میں انسداد دہشت گردی کی یقین دہانی، فوجی انخلا، مکمل جنگ بندی اور بین الافغان مذاکرات کا آغاز شامل ہیں۔ مذاکرات میں ہم انسداد دہشت گردی کی یقین دہانی اور فوجی انخلا کے ڈرافٹ پر متفق ہوئے ہیں۔ فوجی انخلا کی تاریخ اور انسداد دہشت گردی کے اقدام کا مسودہ طے کرنے کے بعد طالبان اور حکومت کے مذاکرات کی طرف بڑھیں گے۔تاہم جب تک تمام نکات پر اتفاق نہیں ہو جاتا،،، تب تک کوئی چیز حتمی نہیں ۔ زلمے خلیل زاد نے کہا اگلے مذاکرات واشنگٹن میں ہوں گے جس میں دوسرے فریقوں سے مشاورت ہوگی ۔