قومی

  • قومی
  • Dec 16, 2018

سانحہ آرمی پبلک سکول پشاور کے شہداء کی یاد میں وزیراعظم پاکستان کا پیغام

وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ پاکستانی قوم نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں وہ قیمت ادا کی جس کا کوئی تخمینہ نہیں لگایا جاسکتا۔ سانحہ آرمی پبلک سکول پشاور کے شہداء کی یاد میں اپنے پیغام میں وزیراعظم نے کہا کہ ہزاروں جانوں کی قربانی دینے اور بے انتہا معاشی نقصانات اٹھانے کے باوجود اگر آج بھی کوئی پاکستان پر الزام تراشی یااسے موردِ الزام ٹھہراتا ہے تو ہم واضح کردینا چاہتے ہیں کہ دنیا کی اس جنگ کی سب سے بھاری قیمت ہماری افواج، سپاہیوں، نہتے شہریوں اور معصوم جانوں نے ادا کی ہے۔
وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ بے انتہاء نقصانات کے باوجود ہم بحثیت قوم ملکی، علاقائی اور عالمی امن کے لئے پرعزم ہیں۔انہوں نے کہا کہ16دسمبر کا دن ہمیں اس سیاہ دن کی یاد دلاتا ہے جب دہشت گردوں نے انسانیت اور مذہب کے تمام تقاضوں کو بالائے طاق رکھتے ہوئے آرمی پبلک سکول پشاور کے ان معصوموں کو نشانہ بنایا جو حصول تعلیم اور روشن مستقبل کی امید لیے سکول آئے۔ معصو م جانوں کی شہادت کے اس دلخراش واقعے نے جہاں پوری قوم کوکرب و غم میں مبتلا کیا وہاں قوم میں دہشت گردی کے خلاف یکجہتی اور وحدت کو بھی جنم دیا۔معصوم جانوں نے اپنے بے گناہ لہو کا نذرانہ دے کرقوم کو ہمیشہ کے لئے ایک ایسے سفاک دشمن کے خلاف متحد کر دیا جو انسانیت کے نام پر دھبہ اور حیوانیت کی بدترین مثال ہے۔آج کے دِن ہم اُن غمزدہ والدین سے دِلی ہمدردی کا اظہار کرتے ہیں جنہوں نے اپنے لخت جگر تعلیم کے حصول کے لیے بھجوائے تھے مگر وہ شہادت کی قبا ا وڑھے گھروں کولوٹے، قوم معصوم شہداء کے ان والدین کے دکھ میں برابر کی شریک ہے۔
وزیراعظم عمران خان نے کہا اللہ کی مدد اور قوم کی حمایت سے بہادر افواج اور قانون نافذ کرنے والے اداروں نے آپریشن ضرب ِعضب اور ردالفسادکے ذریعے دہشت گردی کے خلاف وہ فیصلہ کن معرکہ سر انجام دیا جس کی مثال نہیں ملتی۔ انہوں نےدہشت گردی کیخلاف جنگ میں جانوں کا نذرانہ پیش کرنے والےتمام اداروں کے اُن ہیروز کوبھی سلام پیش کیا۔وزیراعظم نے کہا کہ ہماری حکومت پاکستان کو ایسا معاشرہ بنانے کیلئےپر عزم ہےجہاں فرقہ واریت، مذہب، لسانیت، رنگ و نسل یا کسی بھی طرز پر انتہا پسندی اور تشدد کو برداشت نہیں کیا جائے گا۔