قومی

  • قومی
  • Nov 08, 2018

سینیٹ اجلاس کی کارروائی

سینیٹ میں داخلہ امور کے وزیر مملکت شہریار آفریدی نےکہا ہے کہ ملکی سلامتی کے خلاف اور ریاست کی رٹ کو چیلنج کرنے والوں سے آہنی ہاتھوں سےنمٹا جائے گا مگر حکومت اپنے شہریوں کے خلاف طاقت کا استعمال نہیں کرے ۔سینیٹ میں حالیہ دھرنوں سے پیدا ہونے والی صورتحال پر بحث سمیٹتے ہو ئے داخلہ امور کے وزیر مملکت شہریار آفریدی نے کہا کہ آسیہ بی بی کے معاملے پر عوام کو حقائق کا علم نہیں ۔پہلی بار جب گستانہ مواد کا معاملہ آیا تو حکومت کے کردار کو دھرنے والوں نے سراہا۔ ہمارے ہاں ہمیشہ خون گرنے کے بعد مذاکرات ہوئے ۔وزیر مملکت برائے داخلہ نے کہا حکومتی رٹ چیلنج کرنے والا کسی بھی جماعت سے ہو کوئی بھی ہو اس کے خلاف ایکشن لیا جائے گا۔
ایوان میں ملک کی صورتحال پر بحث میں حصہ لیتے ہو ئے ، سردار اعظم خان موسی خیل ،جاوید عباسی، میر حاصل بزنجو اور عثمان خان کاکڑ نے کہا کہ حکومت کو اپنی رٹ قائم کرنی چا ہئے
محمد علی سیف نے کہا سیاچن دنیا کا سب سے بلند محاذ ہے۔ہمارے جوان مشکل محاذ پر جانفشانی سے اپنے فرائض سر انجام دے رہے ہیں انہیں ہارڈ ایریا الاونس دینا چاہئے اور ان کی تنخواہیں بڑھانے کی ضرورت ہے۔ چیئرمین سینٹ نے معاملہ متعلقہ کمیٹی کو بھجوا دیا
اپوزیشن کی ریکوزیشن پر بلایا سینٹ کا اجلاس کورم مکمل نہ ہونے پر غیر معینہ مدت کے لئے ملتوی ہوگیا ۔