قومی

  • قومی
  • Apr 21, 2017

سینیٹ کا اجلاس

چیرمین سینیٹ رضاربانی اجلاس کی صدارت کر رہے ہیسینیٹ اجلاس حزب اختلاف کی ہنگامہ آرائی کی وجہ سے غیر معینہ مدت کے لئے ملتوی کردیاگیا۔ اجلاس شروع ہوا تو وقفہ سوالات میں صنعت و پیدوار کے وفاقی وزیر غلام مرتضی جتوئی نے بتایا کہ ملک میں گاڑیاں بنانے کی صنعت پر اجارہ داری ختم کرنے کے لئے چین کی کارساز کمپنیوں کو پاکستان میں لایاجارہاہے۔
منصوبہ بندی اور ترقی کے وزیر احسن اقبال نے بتایا کہ چین پاکستان اقتصادی راہداری کی حفاظت کے لئے خصوصی سکیورٹی ڈوژن تشکیل دیاجاچکاہے جو آرمی کمپوزٹ بٹالئینز کے نوہزار دو سو انتیس اہلکاروں اور سول آرمڈ فورسز کے چار ہزار پانچ سو دو اہلکاروں پر مشتمل ہے ۔
وقفہ سوالات کے بعد قائد حزب اختلاف سینیٹر اعتزازاحسن سمیت اپوزیشن سے تعلق رکھنے والے دوسرے ارکان نے پاناما کیس پر سپریم کورٹ کے فیصلے سے متعلق اپنے خیالات کا اظہار کیا ۔ جب چئیرمین سینیٹ نے حکومتی ارکان کو بولنے کی اجازت دی تو اپوزیشن ارکان نے اپنی نشستوں پر کھڑے ہوکر احتجاج اور نعرے بازی شروع کردی ۔
چئیرمین سینیٹ بار بار اپوزیشن ارکان کو ایوان کا ماحول بہتر رکھنے اور نعرے بازی سے گریز کرنے کی درخواست کرتے رہے تاہم حزب اختلاف کے ارکان نے ایوان کے اندر شور شرابا اور احتجاج جاری رکھا جس پر چئیرمین سینٹ نے اجلاس کی کارروائی غیرمعینہ مدت کے لئے ملتوی کردی