تفریح

  • تفریح
  • Apr 20, 2017

دریائے نیل کے قدیم مقبرے سے اہم نوادرات دریافت

مصر میں آثارِ قدیمہ کے ماہرین نےساڑھےتین ہزار سال پرانے مقبرے سے کئی مجسمے، حنوط شدہ لاشیں ، تابوت اوربرتن برآمد کیے ہیں، جنھیں تاریخی اہمیت کا حامل قرار دیا جا رہا ہے۔ان میں سب سے اہم دریافت رعمیس دوم کاگیارہ میٹر بلنداور پچھہترٹن وزنی گرینائٹ کامجسمہ ہے۔جسےفنشنگ کےذریعےبحال کیا گیاہے۔
مقبرہ، القصر کے قریب دریائے نیل کے مغربی کنارے پر واقع ہے، جسے پندرہ سو سےایک ہزارسال قبل مسیح میں تعمیر کیا گیا۔مقبرےکے سامنے ایک چبوترہ ہے جو دو احاطوں کی جانب کھلتا ہے۔ ایک احاطے میں چار رنگین تابوت، جبکہ دوسرے میں چھ تابوت دفن تھے۔دوسرے احاطے کے اندر مجسمے ہیں، جو اس سے پرانے دور کے بادشاہوں کا پتا دیتے ہیں۔