بین الاقوامی

  • بین الاقوامی
  • Jun 12, 2018

امریکی صدر ٹرمپ،شمالی کوریا کے رہنما کِم جونگ اُن کے درمیان تاریخی ملاقات

امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ اور شمالی کوریا کے رہنما کِم جونگ اُن کے درمیان سنگاپور میں تاریخی ملاقات ہوئی۔
دونوں رہنماؤں کے درمیان سنگاپور کے "سینتوسا "جزیرےکے کپيلا ہوٹل ميں وفود کی سطح پر ملاقات ہوئی۔صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا کہ کِم جونگ اُن سے ملاقات مثبت رہی اورتوقعات سے بہتر ثابت ہوئی۔شمالی کوریا کے رہنما نے کہا کہ ملاقات جزیرہ نما کوریا اور خطے میں قیام امن کے لئے اہم پیشرفت ہے۔ملاقات میں امریکی صدر ٹرمپ کی امریکی وزیرخارجہ مائیک پومپیو، امریکہ کے نیشنل سکیورٹی کے مشیر جان بولٹن اور وائٹ ہاؤس کے چیف آف سٹاف جان کیلی نے معاونت کی جبکہ شمالی کوریا کے رہنما کِم جونگ اُن کی ٹیم میں شمالی کوریا کی ملٹری انٹیلی جنس کے سابق سربراہ کِم جونگ چول، وزیر خارجہ "ری یونگ ہو" اورشمالی کوریا کی برسراقتدار ورکرز پارٹی کے نائب چیئرمین "ری سو یانگ" شامل تھے۔ملاقات میں شمالی کوریا کے جوہری ہتھیار تلف کرنے کے بارے میں بات ہوئی ۔ملاقات سے پہلے دونوں رہنماؤں نے میڈیا سے مختصر گفتگو کی ۔ کِم جونگ اُن کا کہنا تھا کہ آج ہم جہاں ہیں، یہاں تک پہنچنا آسان نہیں تھا۔ جبکہ امریکی صدر نے کہا کہ یہ ایک شاندار تعلق ہو گا۔تاريخ ميں یہ پہلا موقع ہے کہ کسی امريکی صدرنے شمالی کوريا کےکسی رہنما سےملاقات کی ہے۔ ملاقات کو جزیرہ نما کوریا میں قیام امن کیلئے انتہائی اہم قرار دیا جا رہا ہے۔