بین الاقوامی

  • بین الاقوامی
  • May 16, 2018

ٹرمپ۔" کِم جونگ اُن" ملاقات کو منسوخ کرنے کے بارے میں سوچا جا سکتا ہے

شمالی کوریا نےامریکہ اور جنوبی کوریا کی مشترکہ فوجی مشقوں پر رد عمل کااظہار کرتے ہوئے کہا ہےکہ بارہ جون کو امریکی صدرٹرمپ اورشمالی کوریا کے رہنما" کِم جونگ اُن" کے درمیان طے شدہ ملاقات کو منسوخ کرنے کے بارے میں سوچا جا سکتا ہے۔
شمالی کوریا کی سرکاری نیوزایجنسی کے مطابق شمالی کوریا نے جنوبی کوریا کی امریکی افواج کے ساتھ مشترکہ مشقوں پر ناراضگی کا اظہار کرتے ہوئے جنوبی کوریا کے ساتھ آج ہونے والی اعلیٰ سطح ملاقات بھی ملتوی کر دی ہے۔شمالی کوریا کا کہنا ہے اگر امریکہ نے اس پر یکطرفہ طور پر ایٹمی ہتھیاروں کو ختم کرنے سے متعلق دباؤ جاری رکھا تو شمالی کوریا کو بھی ٹرمپ۔کِم جونگ اُن کے درمیان ملاقات میں کوئی دلچسپی نہیں رہے گی اوراس دوبارہ جائزہ لیا جائے گا۔شمالی کوریا نےامریکہ اور جنوبی کوریا کے درمیان فوجی مشقوں کو بھی اشتعال انگیز اقدام قرار دیاہے اور کہا ہے کہ اس سے بارہ جون کو سنگاپور میں شمالی کوریا کے سربراہ "کِم جونگ اُن" اور امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے درمیان ہونے والی ملاقات خطرے میں پڑ سکتی ہے۔امریکہ اورجنوبی کوریا کہ درمیان پیر سے جاری فوجی مشق میں سوکے قریب جنگی جہاز حصہ لے رہے ہیں جن میں امریکہ کے "بی ففٹی ٹو"بمبار طیارے اور "ایف ففٹین" جیٹ طیارے بھی شامل ہیں۔