قومی

  • قومی
  • Dec 06, 2017

مشترکہ مفادات کونسل بہت جلد قومی بجلی پالیسی کی منظوری دے گی, وزیرتوانائی

وزیرتوانائی اویس احمد خان لغاری نے کہا ہےکہ مستقبل کی ضروریات کو مدنظر رکھتے ہوئے مشترکہ مفادات کونسل بہت جلد قومی بجلی پالیسی کی منظوری دے گی جس کے بعد پہلی بارملک میں قومی بجلی پلان تشکیل دیا جائے گا۔ انھوں نے یہ بات غیر منافع بخش تنظیم ایس ڈی پی آئی کی اسلام آباد میں جاری کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہی

ایس ڈی پی آئی کے زیر انتظام پائیدار ترقی سے متعلق عالمی کانفرنس میں مختلف شعبوں کے ماہرین اور حکومتی نمائندوں پر مشتمل گروپس کے راونڈ ٹیبل سیشنز ہوئے جن میں شرکاء نے ملکی معیشت کے مختلف پہلووں پر اظہار خیال کیا ۔ مستقبل میں توانائی کی ضروریات سے متعلق سیشن میں اظہار خیال کرتے ہوئے وفاقی وزیر اویس احمد خان لغاری نے کہا کہ انکی تمام تر توجہ اپنی وزارت میں شفافیت، احتساب اور بہتر انتظامی طرز پر مرکوز ہے ۔ اُن کا کہنا تھا کہ ہمیں صارف دوست اور مقابلے کی فضاء پر مبنی پالیسیوں اور ان پر موثر انداز میں عمل درآمد کی ضرورت ہے ۔

اویس احمد لغاری کا کہنا تھا کہ بدقسمتی سے اداروں میں کرپشن اور شفافیت کا مسلہ بہت سنگین ہے ، صارفین کا حق ہے کہ وہ جو پیسے بجلی کےلئے ادا کر رہے ہیں اس کے بارے میں انھیں مکمل معلومات حاصل ہوں۔

ملک میں وفاقی اور صوبائی سطح پر ٹیکس نظام میں اصلاحات سےمتعلق ایک اور سیشن سے خطاب کرتے ہوئے خزانے کے پارلیمانی سیکرٹری رانا محمد افضل نے کہا کہ موجودہ حکومت نے ٹیکس وصولیوں کے نظام میں خاصی اصلاحات متعارف کرائی ہیں جن کے نتیجے میں گذشتہ چار سال میں ٹیکس وصولیوں میں 72 فیصد اضافہ ہوا۔ انھوں نے کہا کہ ہمیں اپنے عوام خصوصا تاجر طبقے کو یہ احساس دلانا ہوگا کہ انکے دئیے ہوئے ٹیکسوں کی رقم ملکی ترقی اور عوامی فلاح و بہبود کے منصوبوں پر خرچ ہو رہی ہے۔ کانفرنس میں شریک مختلف مندوبین نے ٹیکس نظام میں اصلاحات سے متعلق اپنی تجاویز سے آگاہ کیا ۔