بین الاقوامی

  • بین الاقوامی
  • Sep 13, 2017

اقوام متحدہ کے ہائی کمشنرکاجنیوا میں روہنگیا کے بحران پر خطاب

میانمار میں روہنگیا مسلمانوں کی حالت زار پر غور کے لئے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کا اجلاس آج ہو رہا ہے۔
اجلاس برطانیہ اورسویڈن کی اپیل پر طلب کیا گیا ہے۔اس سے پہلے اقوام متحدہ کےانسانی حقوق کے ہائی کمشنر زید بن رعد الحسین نے جنیوا میں حقوق انسانی کمیشن کونسل سےخطاب میں خبردار کیا تھا کہ میانمار میں روہنگیا مسلمانوں کو سکیورٹی آپریشن میں ہدف بنانا اُن کی نسل کشی کے مترادف ہے۔انہوں نےمیانمار کی حکومت پر زور دیا کہ ریاست رخائن میں جاری ظالمانہ فوجی آپریشن ختم کیا جائے ۔انہوں نےروہنگیا پناہ گزینوں کو ملک بدر کرنے کے بھارت کے فیصلے کی بھی مذمت کی ۔
اقوام متحدہ کے مطابق میانمار کی ریاست رخائن میں پچیس اگست سے شروع ہونے والے فوجی آپریشن کے بعد سے اب تک تین لاکھ ستر ہزار روہنگیا مسلمان بنگلہ دیش میں پناہ لینے پر مجبور ہو گئے ہیں۔بنگلہ دیش کی وزیر اعظم شیخ حسینہ نے میانمار حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ مسائل کے حل کے لئے اقدامات کرے تاکہ روہنگیا باشندے واپس وطن جا سکیں۔دوسری جانب روہنگیا بحران کے پیش نظر میانمار کی لیڈر آنگ سان سوچی نے دورہ امریکہ منسوخ کر دیا ہے۔انہوں نےاقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے اجلاس میں شرکت کرنا تھی۔