قومی

  • قومی
  • Aug 29, 2016

فوجی عدالتوں سےسزائے موت پانے والے مجرموں کی اپیلیں خارج

سپریم کورٹ نےفوجی عدالتوں سےسزائے موت پانے والے مجرموں کی اپیلوں پر فیصلہ سناتے ہوئے کہا ہے کہ فوجی عدالتوں نے فیئر ٹرائل کے تمام ضابطے پورے کئے اور تمام سزائیں آرمی ایکٹ کے تحت د یں ۔سزا پانے والے مجرم فوجی قافلوں اور اہم تنصیبات پر حملوں سمیت دہشت گردی کے دوسرے سنگین واقعات میں ملوث تھے۔چیف جسٹس انور ظہیر جمالی کی سربراہی میں پانچ رکنی پنچ نے اپیلوں پر سماعت مکمل کرتے ہوئے بیس جون کو فیصلہ محفوظ کرلیا تھا ۔ بنچ کے رکن جسٹس شیخ عظمت سعید نے فیصلہ تحریر کرتے ہوئے تمام سولہ اپیلیں مسترد کیں ۔ ۔ سپریم کورٹ کے ایک سو بیاسی صفحات پر مشتمل فیصلے میں کہا گیا ہے کہ ملزموں کے جرائم ایسے تھے جن کا ٹرائل صرف فوجی عدالتوں میں ہوسکتا تھا۔کسی فوجی عدالت کا کسی مجرم سے ذاتی عناد ثابت نہیں ہوسکا اور نہ ہی درخواست گزاروں کا کوئی وکیل فوجی عدالتوں کے فیصلوں میں بدنیتی ثابت نہ کرسکا۔